یادیں

349 بار دیکھا گیا

یہ بھی نہیں کہ۔۔۔

میں یاد نا آوں۔۔۔

میں یاد تو آونگا۔۔۔

جب بھی محبت کی بات چلے گی۔۔۔

کچھ کہنے لگو گی۔۔۔

کچھ لکھنے لگو گی۔۔۔

تو ایسے میں لمحے بھر کو۔۔۔

یاد کے دروازے پر اک دستک ہوگی۔۔۔

ٹھٹک کر رک جاو گی۔۔۔

سوچو گی۔۔۔

دل دھڑک جائے گا۔۔۔

میرا نام لب پر آیگا۔۔۔

آنکھ نم ہو جائے گی۔۔۔

سر جھٹک کر۔۔۔

بامشکل مسکراو گی۔۔۔

پھر سے مجھے بھول جاو گی۔۔۔

مگر ہاں۔۔۔ اتنا تو ہوگا۔۔۔

تم کچھ بھی کہہ نا پاو گی۔۔۔

کچھ لکھ نا پاو گی۔۔۔

لمحہ بھر ہی سہی۔۔۔

میری محبت سے۔۔۔

ہار جاو گی۔۔۔

 

ٹیگز: , , ,

اس پوسٹ کے بارے میں اپنے احساسات ہم تک پہنچائیں یہاں تبصرہ کریں

تبصرے بذیعہ فیس بک۔۔۔۔

10 تبصرے

تبصرہ کرتے وقت مت بھولئے کہ آپ بہت اچھے/اچھی/درمیانےقسم کے اچھے/ ہیں

error: خدا کا خوف کھاو بھائی، کیا کرنا ہے کاپی کر کے۔۔۔
%d bloggers like this: